ورلڈکپ میں سوپر اسٹار بننے کا موقع ہوتاہے:شاداب

پاکستان کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان شاداب خان نے کہا ہے کہ ہم نے پوری دنیا میں کرکٹ کھیلی ہے لیکن ہندوستان میں پہلی مرتبہ کھیلیں گے۔

حیدرآباد: پاکستان کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان شاداب خان نے کہا ہے کہ ہم نے پوری دنیا میں کرکٹ کھیلی ہے لیکن ہندوستان میں پہلی مرتبہ کھیلیں گے۔

حیدر آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شاداب خان نے کہا کہ ورلڈکپ ایک ایسا پلیٹ فارم ہے کہ اگر آپ اس میں پرفارم کرتے ہیں تو سوپر اسٹار بن جاتے ہیں، بحیثیت کھلاڑی آپ کے پاس موقع ہوتاہے کہ ورلڈ کپ میں اچھی پرفارمنس دیکر اسٹار بنیں۔

شاداب خان نے کہاکہ جتنے بھی کھلاڑی یہاں آئے ہیں ان کی کوشش ہے کہ وہ پرفارمنس دیکر سوپر اسٹار بنیں، فخر زمان ایک بڑا کھلاڑی ہے اور ایک امپیکٹ فل پلیئر ہے، فخر زمان جیسے کھلاڑیوں میں اگر تسلسل نہیں ہوتا مگر وہ جب پرفارم کرتے ہیں تو ٹیم جیتتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس سال بھی فخر زمان کی 3 سنچریاں ہیں جس کی بدولت پاکستان نے کامیابی حاصل کی۔

ہر ٹیم چاہتی ہے کہ فخر جیسے کھلاڑی ان کی ٹیم میں ہوں، وہ ہمارا ورلڈ کلاس پلیئر ہے اور ہمیں اس کے اوپر کوئی شک نہیں ہے۔ شاداب نے کہاکہ ہم انہیں سپورٹ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں دوسرے مقامات کے حالات کا اندازہ نہیں ہے، ہمیں جلد ازجلد حالات سے ہم آہنگ ہونا پڑے گا، ورلڈکپ لمبا ٹورنامنٹ ہے جس میں حالات اور فٹنس تمام ٹیموں کیلئے فکر مندی کی بات ہے۔

پاکستانی ٹیم کے نائب کپتان نے کہاکہ ہم نے ایشیا کپ اور حالیہ سیریز میں دیکھا کہ کھلاڑی انجریز کا شکار ہوئے، ہم پہلے ہی ایک بڑے کھلاڑی کو کھو چکے ہیں اور مزید کھلاڑیوں کی انجریز برداشت نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہاکہ ان حالات میں رنز روکنا اور وکٹیں لینا مشکل ہوتاہے، ہندوستان میں فلیٹ ٹریکس اور چھوٹی باؤنڈریز ہیں، ہمارے پاس ورلڈ کلاس بولرز ہیں، اگر ہم بولنگ اچھی کریں گے تو چمپئن بنیں گے، اس ٹورنامنٹ میں وہ ٹیم کامیاب ہوگی جس کی بولنگ اچھی ہوگی۔

شاداب خان نے کہا کہ احمد آباد والا میچ ابھی دور ہے اس سے پہلے بھی ہمیں کئی میاچس کھیلنے ہیں، بابر، رضوان اور امام الحق تسلسل سے پرفارم کرنے والے کھلاڑی ہیں۔ شاداب خان نے کہاکہ بحیثیت ٹیم ہمارا ایشیا کپ اچھا نہیں رہا، یہی کرکٹ کی خوبصورتی ہے کہ آپ غلطیوں سے سیکھتے ہیں، آپ کے پاس موقع ہوتاہے کہ آپ غلطیوں سے سیکھ کر انہیں بہتر کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ ایشیا کپ میں ہارنے کے بعد ہمیں آرام ملا، کرکٹ اسکلز سے زیادہ دماغی کھیل بن چکا ہے، جب آپ ذہنی طورپر ریلیکس ہوتے ہیں تو اچھے فیصلے کرتے ہیں، میری حالیہ فارم بلکل اچھی نہیں رہی، آرام ملنے سے میں ذہنی طورپر تازہ دم ہوا ہوں۔

شاداب خان نے کہا کہ ہندوستان میں حالات پاکستان سے ملتی جلتی ہیں، وارم اپ میچ میں وکٹ راولپنڈی کی پچ کی طرح لگی، بلکل فلیٹ وکٹ تھی، آئندہ میچ کھیلنے سے ہمیں حالات کا بہتر اندازہ ہوجائے گا۔

نائب کپتان نے مزید کہاکہ ہندوستان میں جس طرح کی مہمان نوازی کی گئی اس سے ہمیں مزہ آیا، امید ہے کہ احمدآباد میں جب ہندوستان کے خلاف کھیل رہے ہوں گے تو ایسی ہی مہمان نوازی ملے گی، یہاں کھانے بڑے اچھے ہیں، ہمارا گورا اسٹاف بھی ان کھانوں پر لگ گیاہے، کھانے اتنے لذیز ہیں کہ لگتا ہے کہ ہمارا فیٹ لیول اور وزن بڑھ جائے گا۔

شاداب خان نے کہاکہ مجھے بطور بیٹر روہت شرما کافی پسند ہیں، وہ دنیا کے ایسے بیٹرز ہیں کہ سیٹ ہونے کے بعڈ انہیں آؤٹ کرنا اور انہیں بولنگ کرنا مشکل ہو جاتا ہے، میں لیگ اسپنر ہوں تو بولرز میں کلدیپ یادو کا نام لوں گا، کلدیپ یادو اچھی فارم میں ہیں، وہ مشکل حالات میں بھی اچھا پرفارم کر رہے ہیں۔