دہلی

الیکشن کمیشن کو کمزور کرنے کی کوشش: رندیپ سرجے والا

راجیہ سبھا میں اس بل پر بحث شروع کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سے جمہوریت کی بنیاد پر حملہ ہوگا۔ جمہوریت کی بنیاد شفاف اور آزادانہ انتخابات ہیں اور ان کی بنیاد الیکشن کمیشن ہے۔ یہ بل الیکشن کمیشن کو کمزور کرتا ہے۔

نئی دہلی: کانگریس کے رندیپ سنگھ سرجے والا نے کہا کہ چیف الیکشن کمشنر اور دیگر کمشنرز (تقرری، سروس کی شرائط اور دفتر کی مدت) سے متعلق بل 2023 جمہوریت کی بنیاد کو کچلنے کی کوشش ہے۔

متعلقہ خبریں
انتخابی کام کیلئے بینک ملازمین کی کم تعداد کا استعمال کیاجائے
10سال سے ملک کی آواز ہم نے نہیں آپ نے سلب کر رکھی تھی، مودی پر کانگریس کا پلٹ وار
سی آئی ایس ایف کا 3300 رکنی دستہ آج سے پارلیمنٹ سیکوریٹی سنبھال لے گا
12 سالہ لڑکی کی عصمت ریزی نے شرمسار کردیا
منی پور کا مسئلہ پارلیمنٹ میں پوری طاقت سے اٹھایا جائے گا: راہول گاندھی

منگل کو راجیہ سبھا میں اس بل پر بحث شروع کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سے جمہوریت کی بنیاد پر حملہ ہوگا۔ جمہوریت کی بنیاد شفاف اور آزادانہ انتخابات ہیں اور ان کی بنیاد الیکشن کمیشن ہے۔ یہ بل الیکشن کمیشن کو کمزور کرتا ہے۔

 ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر حکومت جمہوری اور عوامی جذبات کو سمجھتی تو یہ بل نہ لاتی۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی عمل حکومتی مداخلت سے پاک ہونا چاہیے۔

قبل ازیں وزیر قانون و انصاف ارجن میگھوال نے چیف الیکشن کمشنر اور دیگر کمشنرز (تقرری، سروس کنڈیشنز اور ٹرم آف آفس) بل 2023 کو غور و خوض اور منظوری کے لیے ایوان میں پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ بل سپریم کورٹ کی آبزرویشنز کے مطابق لایا گیا ہے۔ مارکسی کمیونسٹ پارٹی کے جان برٹاس نے اس بل کو مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کو بھیجنے کی تجویز پیش کی۔

مسٹر سرجے والا نے کہا کہ ایسا الیکشن کمیشن جس کی تقرری ایگزیکٹو کے ذریعہ کی جارہی ہے ، جمہوریت کو تباہ کردے گی۔ ایسا الیکشن کمیشن غیر جانبداری اور آزادی کو ختم کر دے گا۔ یہ بل آئین اور آئین بنانے والوں کی روح کو تباہ کر دے گا۔ حکومت جان بوجھ کر ایسا کر رہی ہے۔

کانگریس رکن نے کہا کہ حکومت اکثریت میں ہے اور من مانی فیصلے کر رہی ہے۔ وہ الیکشن کمیشن میں "اپنے لوگوں” کو تعینات کرنا چاہتی ہے۔ اسی لیے یہ بل لایا گیا ہے۔ حکومت "جیب والا الیکشن کمیشن” اور ایک ایسا الیکشن کمیشن چاہتی ہے جو اس کے کہنے پر کام کرے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی نیت ٹھیک نہیں ہے۔ حکومت من مانی طریقے سے قانون بنا رہی ہے۔

a3w
a3w