مشرق وسطیٰ

’فلسطین غزہ جنگ پر گٹیریس کے موقف کی ستائش کرتا ہے‘

فلسطین غزہ تنازعہ پر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گٹیریس کے موقف کی ستائش کرتا ہے، حالانکہ امداد کافی نہیں ہے۔

اقوام متحدہ: فلسطین غزہ تنازعہ پر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گٹیریس کے موقف کی ستائش کرتا ہے، حالانکہ امداد کافی نہیں ہے۔

متعلقہ خبریں
اسرائیلی فائرنگ میں پانچ افراد فوت

یہ بات اقوام متحدہ میں فلسطینی سفیر ریاض منصور نے کہی۔ انہوں نے روسی خبر رساں ایجنسی اسپوتنک سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہم سیکرٹری جنرل کے فوری طور پر انسانی بنیادوں پر جنگ بندی کے مطالبے کی ستائش کرتے ہیں۔

غزہ پٹی بچوں کا قبرستان بنتی جا رہی ہے اور جرائم کو روکنا ہوگا۔ ہم ان بیانات کو سراہتے ہیں۔‘‘ انہوں نے کہا کہ جیسا کہ سیکرٹری جنرل نے تجویز کیا ہے کہ روزانہ کم از کم 100 ٹرک لوڈ کیے جائیں۔ ہمیں اس سے زیادہ کی ضرورت ہے۔

دوسری جانب امریکی محکمہ خارجہ کے سینیئر اہلکار ڈیوڈ سیٹر فیلڈ نے جمعرات کو کہا کہ امدادی سامان سے لدے 100 ٹرک روزانہ غزہ پہنچ رہے ہیں۔ تاہم انہوں نے کہا کہ جو امداد پہنچ رہی ہے وہ صرف آبادی کی ’کم از کم ضروریات‘ کو پورا کرتی ہے۔

واضح رہے کہ 7 اکتوبر کو فلسطینی گروپ حماس نے اسرائیل میں گھس کر راکٹوں سے حملہ کیا تھا جس میں 1400 افراد مارے گئے تھے۔ اس کے بعد اسرائیل نے ایک انتقامی فوجی مہم شروع کی جس کا مقصد حماس کو ختم کرنا تھا اور غزہ کی مکمل ناکہ بندی کر دی جس کی آبادی تقریباً 20 لاکھ ہے۔

وائٹ ہاؤس کے مطابق شہریوں کی نقل و حرکت اور امداد کی ترسیل کو آسان بنانے کے لیے روزانہ 4 سے 5 گھنٹے کی جنگ بندی پر عمل درآمد کیا جا رہا ہے۔

a3w
a3w