حیدرآباد

راہول گاندھی کی بھارت جوڑو یاترا تلنگانہ میں داخل

راہول گاندھی کی پدایاترا اب تک 4 ریاستوں میں مکمل ہو چکی ہے۔ تلنگانہ میں داخل ہونے والے راہول گاندھی کو دیکھنے کے لیے عوام کی بڑی تعداد جمع تھی۔ان کی یاترا پر کافی بہتر عوامی ردعمل دیکھاگیا۔جگہ جگہ ان کا استقبال کیاگیا۔

حیدرآباد: کانگریس لیڈرراہول گاندھی کی بھارت جوڑویاترا کرناٹک سے تلنگانہ میں داخل ہوگئی۔ راہول،پڑوسی ریاست کرناٹک کے رائچور سے تلنگانہ کے نارائن پیٹ ضلع کے مکتھل حلقہ میں داخل ہوئے جہاں تلنگانہ کانگریس کے کئی لیڈروں اور کارکنوں نے ان کا شاندار استقبال کیا۔

تلنگانہ میں داخل ہونے کے بعد کرناٹک پی سی سی کے لیڈر شیوکمار نے تلنگانہ کانگریس کے سربراہ ریونت ریڈی کو قومی پرچم سونپا۔ راہول گاندھی کی پدایاترا اب تک 4 ریاستوں میں مکمل ہو چکی ہے۔ تلنگانہ میں داخل ہونے والے راہول گاندھی کو دیکھنے کے لیے عوام کی بڑی تعداد جمع تھی۔ان کی یاترا پر کافی بہتر عوامی ردعمل دیکھاگیا۔جگہ جگہ ان کا استقبال کیاگیا۔

راہول گاندھی نے اتوار کے بعد تین دن کا وقفہ لیں گے۔ راہول گاندھی، اے آئی سی سی صدر کی حیثیت سے ملکارجن کھرگے کی حلف برداری کی تقریب میں شرکت کے لیے 24 سے 26 اکتوبرتک یاترا سے وقفہ لیں گے۔ ریاست میں راہل کی یاترا 12 دن تک جاری رہے گی۔12دنوں میں 375کلومیٹرراہول گاندھی پیدل چلیں گے اور7لوک سبھا و17اسمبلی حلقوں کا احاطہ کریں گے۔

 بھارت جوڑو یاترا 31 اکتوبر کو شمس آباد کے راستہ حیدرآباد میں داخل ہوگی۔ یکم اور 2 نومبر کو وہ کوکٹ پلی اور بی ایچ ای ایل کے راستے سنگاریڈی ضلع جائیں گے۔

تلنگانہ میں ان کی یاترامیں بڑی تعداد میں کانگریس کے لیڈران اورکارکنان شریک ہیں۔ بھارت جوڑو یاترا کے دوران پولیس نے مکتھل کے کئی علاقوں میں ٹریفک پر پابندیاں عائد کر دیں۔

a3w
a3w