سوشیل میڈیامہاراشٹرا

ویڈیو: کورین خاتون یوٹیوبر کو جنسی ہراسانی، 2 نوجوان گرفتار

ممبئی کے مضافات کے کھار نامی علاقے میں بھری سڑک پر ان نوجوانوں کو جنوبی کوریا سے تعلق رکھنے والی ایک غیر ملکی خاتون یوٹیوبر، کو جنسی طور پر ہراساں کرتے ہوئے اور اسکا ہاتھ پکڑ کر اسے موٹر سائیکل پر بیٹھنے کی دعوت دیتے دکھلایا گیا تھا۔

ممبئی: ممبئی پولیس نے جمعرات کو دو نوجوانوں کو گرفتار کیا۔ ان دونوں مسلم نوجوانوں کی گرفتاری اسوقت عمل میں آئی جب اس معاملے کا ایک ویڈیو وائرل ہوا۔

 جس میں ممبئی کے مضافات کے کھار نامی علاقے میں بھری سڑک پر ان نوجوانوں کو جنوبی کوریا سے تعلق رکھنے والی ایک غیر ملکی خاتون یوٹیوبر، کو جنسی طور پر ہراساں کرتے ہوئے اور اسکا ہاتھ پکڑ کر اسے موٹر سائیکل پر بیٹھنے کی دعوت دیتے دکھلایا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق انہیں اس ضمن میں کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی تھی لیکن سوشل میڑیا پر ویڈیو وائرل ہونے کےبعد پولیس نے اس واقعہ کا از خود نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات شروع کردی تھی جسکے بعد ۔

مقامی کھار پولیس اسٹیشن نے ملزمین – مبین چند محمد شیخ اور محمد نقیب صدرالام انصاری کو گرفتار کیا ہے۔ان کے خلاف آئی پی سی کے 354 کے تحت معاملہ۔ درج کیا گیا ہے۔

"ہمیں واقعے کے بارے میں الرٹ کیا گیا، اور اس کے فوراً بعد، ایک ٹیم تشکیل دی گئی، اور اس کے بعد، تحقیقات کا آغاز کیا گیا۔ چونکہ ویڈیو کے ذریعے ہمیں ان کے چہرے کی شناخت ملی تھی، اس لیے ہم نے ان کی تلاش شروع کی۔

 اس بات کی تصدیق ہوئی کہ وہ کھار کے علاقے میں ہی رہتے تھے۔اور اسکے بعد کی گئ تفشیش کے بعد انھیں گرفتار کیا گیا ، ، "ڈی سی پی انیل پارسکر، زون 9 نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے یہ باتیں کہی ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ٹیم کو دونوں ملزمان کو گرفتار کرنے میں صرف پانچ سے چھ گھنٹے لگے۔ دونوں کی صحیح جگہ پولیس کے ذریعے محفوظ ہے۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان کو آج عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ رپورٹس کے مطابق خاتون اسٹریمر واردات کے وقت لائیو سٹریمنگ کر رہی تھیں۔

a3w
a3w