حیدرآباد

گیس سلنڈر کی قیمتوں سے عام آدمی کے جیب پر کوئی اثر نہیں پڑا: ڈی کے ارونا

ڈی کے ارونا نے کہا کہ پکوان گیس سلنڈر کی قیمت 1200روپئے ہے،یہ سلنڈر دوماہ تک چلتا ہے اور اس طرح ہر دن اس پر 20روپئے عائد ہوتے ہیں۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ریاستی حکومت 300روپئے کا زائد ٹیکس وصول کررہی ہے جس کی وجہ سے سلنڈر کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے۔

حیدرآباد: حالیہ دنوں کے دوران گھریلوپکوان گیس اور کمرشیل ایل پی جی سلنڈرس کی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافہ پر پورا ملک مودی زیرقیادت مرکزی حکومت پر تنقید کررہا ہے تو وہیں دوسری طرف بی جے پی کی قومی نائب صدرڈی کے ارونا نے اس کا دفاع کیا اور دعوی کیا کہ سلنڈرس ہنوز قابل دسترس ہیں۔

متعلقہ خبریں
کالیشورم پروجیکٹ اسکام پر کانگریس کا دہرا موقف: ڈی کے ارونا
رام بھی چیف منسٹر ریونت ریڈی کی کرسی نہیں بچا سکیں گے، ڈی اروند کا سنسنی خیز تبصرہ
سینئر بی جے پی قائد نندکشور یادو، بہار اسمبلی کے اسپیکر منتخب
سیاست میں دروازے، ہمیشہ بند نہیں ہوتے : بی جے پی قائد مودی
بی جے پی قائد سوریہ کانتا ویاس سے اشوک گہلوت کی حیرت انگیز ملاقات

 اور اس سے عام آدمی کے جیب پر اثر نہیں پڑا ہے۔انہوں نے کہا ”پکوان گیس سلنڈر کی قیمت 1200روپئے ہے،یہ سلنڈر دوماہ تک چلتا ہے اور اس طرح ہر دن اس پر 20روپئے عائد ہوتے ہیں“۔

انہوں نے دعوی کیا کہ ریاستی حکومت 300روپئے کا زائد ٹیکس وصول کررہی ہے جس کی وجہ سے سلنڈر کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے کہاکہ اگر تلنگانہ حکومت عوام کی بہبود کا خیال رکھتی ہے تو اس کو چاہئے کہ وہ سلنڈرس پر قیمت میں کمی کرے۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ارونا نے ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں اضافہ کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے پوچھا کہ بی آرایس حکومت نے شراب کی قیمت میں اضافہ کیا تو اس پر کیوں سوال نہیں کیاگیا؟انہوں نے کہاکہ جب شراب کی قیمتوں میں اضافہ کیاگیا تو کسی نے بھی اس پر سوال نہیں کیا۔

a3w
a3w