مضامین

تاریخ کے جھروکوں سے۔ 24 جولائی کو ماضی میں کیا کچھ ہوا تھا

نئی دہلی: ہندوستان اور عالمی تاریخ میں 24 جولائی  کے اہم واقعات اس طرح ہیں۔

نئی دہلی: ہندوستان اور عالمی تاریخ میں 24 جولائی  کے اہم واقعات اس طرح ہیں۔

متعلقہ خبریں
ایرانی قائد اپوزیشن نے اسرائیلی پارلیمنٹ سے خطاب کرکے تاریخ بنائی
کوہلی کو پیچھے چھوڑنا بہت مشکل ہے:اسٹیو اسمتھ

1758 ۔ امریکہ کے صدر جارج واشنگٹن پہلی اسمبلی ورجینیا ہاؤس آف برجیسیز میں شامل ہوئے۔

1793۔فرانس نے دنیا کے پہلے کاپی رائٹ قانون کو منظوری دی۔

1823۔ چلی میں غلامی کا رواج ختم ہوا۔

1870 ۔ امریکہ میں پہلی ریل خدمات کا آغاز ہوا۔

1886۔چین نے برما کیلئے برطانوی تحفظ حاصل کیا۔

1870۔امریکہ اور پڑوسی ملکوں کے درمیان پہلی ریل خدمات شروع۔

1890۔سوبھا بازار کلب فٹبال ٹیم کسی انگلیش ٹیم کو ہرانے والی پہلی ہندوستانی ٹیم بنی۔

1911 ۔ ہندوستان کے مشہور بانسري نواز پنالال گھوش کی پیدائش ہوئی۔

1924۔پیرس میں عالمی شطرنج فیڈریشن (فیڈے) کا قیام عمل میں آیا۔

1932۔ رام کرشن مشن ادارے کا قیام عمل میں آیا۔

1937۔مشہور اداکار منوج کمار کی پیدائش ہوئی۔

1944۔دوسری جنگ عظیم کے دوران اتحادی افواج کی فوجوں نے جرمنی پر 300 طیاروں سے بمباری کی۔

1945 ۔ہندوستانی صنعت کی معروف شخصیت عظیم پریم جی کی پیدائش ہوئی۔

1961۔امریکی تجارتی طیارہ کا کیوبا میں اغوا۔ یہ دنیا میں طیارہ اغوا کا پہلا حادثہ تھا۔

1969۔اپولو 11 خلائی جہاز زمین پر واپس آیا۔

1974۔قبرص میں جمہوریت کا قیام عمل میں آیا

1982 ۔جاپان کے ناگاساکی میں زبردست بارش کے سبب پل گرنے سے 299 افراد ہلاک ہوئے۔

1994۔ آسام کے بسباری میں بوڈو نے 37 مسلمانوں کا قتل کیا۔

1985۔وزیراعظم راجیو گاندھی اور سکھ لیڈر ہرچند سنگھ لونگاوال کے درمیان امن معاہدہ پر دستخط ہوئے۔

1989۔ لوک سبھا میں بیشتر حزب مخالف کے ارکان نے ایوان سے استعفی دیا۔

1994۔آسام کے بسباري میں بوڈو انتہا پسندوں نے ایک خاص مذہب کے 37 لوگوں کو قتل کیا۔

2000 ۔ایس وجے لكشمی شطرنج کی پہلی خاتون گرینڈ بنی۔

2004 ۔اٹلی نے ہندوستانی سیاحوں کے لیے سات ویزا کال سینٹر شروع کرنے کا فیصلہ کیا۔

2005۔کوریائی علاقے کو جوہری ہتھیاروں سے پاک کرانے کے لئے شمالی اور جنوبی کوریا کے مابین عام اتفاق رائے قائم ہوا۔

2006 ۔پیورٹو رکو کی شہری زلیخہ ریفیرا مینڈوزامس یونیورس، 2006 منتخب ہوئیں۔

2008 ۔فرانس کے ٹریكیسٹن جوہری پلانٹ میں رساؤ سے تقریباً 100 افراد متاثر ہوئے۔

a3w
a3w