مشرق وسطیٰ

اسرائیل حماس کے ساتھ جنگ کے تیسرے مرحلہ میں پہنچ گیا: نیتن یاہو

نیتن یاہو نے واضح طور پر حماس کی عسکری اور آپریشنل صلاحیتوں کو تباہ کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ ہم اسے منظم طریقے سے کر رہے ہیں۔ پہلا بلاکنگ مرحلہ ختم ہو گیا ہے۔ دوسرا مرحلہ، انہیں فضا سے مارنا جاری ہے۔

یروشلم: اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ اسرائیل حماس کے خلاف اپنی جنگ کے تیسرے مرحلے میں داخل ہو گیا ہے۔ نیتن یاہو نے اپنے بیان میں کہا کہ ’’ہم جنگ کے درمیان میں ہیں۔

متعلقہ خبریں
نیتن یاہو نے کم وسائل میں بھی لڑنے کا اعلان کیا
جنگ بندی مذاکرات میں پیش رفت نہیں ہوپائی: حماس
غزہ اور مغربی کنارے پر اسرائیلی حملوں میں خواتین اور بچوں سمیت 17 فلسطینی شہید
اسرائیل حماس مذاکرات شروع کریں، غزہ کے لوگ زیادہ انتظار نہیں کر سکتے: سعودی عرب
ویڈیو: اسرائیل میں حکومت کے خلاف ہنگامے پھوٹ پڑے

ہم نے واضح طور پر حماس کی عسکری اور آپریشنل صلاحیتوں کو تباہ کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ ہم اسے منظم طریقے سے کر رہے ہیں۔ پہلا بلاکنگ مرحلہ ختم ہو گیا ہے۔ دوسرا مرحلہ، انہیں فضا سے مارنا جاری ہے۔ "تیسرے مرحلے کے طور پر، آئی ڈی ایف نے غزہ کی پٹی میں اپنی زمینی دراندازی کو وسعت دی ہے۔”

قابل ذکر ہے کہ 7 اکتوبر کو فلسطینی گروپ حماس نے غزہ کی پٹی سے اسرائیل کے خلاف بڑے پیمانے پر راکٹ حملے کیے، سرحد کی خلاف ورزی کی اور اسرائیلی شہریوں کو قتل اور اغوا کیا۔ اسرائیل نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے غزہ کی پٹی کی مکمل ناکہ بندی کر دی۔

 جس میں 20 لاکھ سے زائد افراد آباد ہیں، جس سے وہاں پانی، خوراک اور ایندھن کی سپلائی بند ہوگئی۔ بعد ازاں انسانی امداد لے جانے والے ٹرکوں کو غزہ کی پٹی میں داخل ہونے کی اجازت دی گئی۔ اسرائیل فلسطین تنازع میں ہزاروں افراد ہلاک اور ہزاروں زخمی ہو چکے ہیں۔

a3w
a3w