بھارت

شمالی بنگال میں بی جے پی کے بند کا اثر، دکانیں بند رہیں، پرائیویٹ بسیں نہیں چلیں

کولکتہ: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے 12 گھنٹے کے بند کی وجہ سے شمال مغربی بنگال کے کئی علاقوں میں نجی بسیں سڑکوں سے غائب رہیں اور دکانیں اور بازار بند رہے۔

کولکتہ: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے 12 گھنٹے کے بند کی وجہ سے شمال مغربی بنگال کے کئی علاقوں میں نجی بسیں سڑکوں سے غائب رہیں اور دکانیں اور بازار بند رہے۔

متعلقہ خبریں
دھان کی خریداری میں دھاندلیوں کی سی بی آئی جانچ کروائے گی:بی جے پی
بی جے پی نے بھگود گیتا پاٹھ کا سیاسی استحصال کیا: ٹی ایم سی
مغربی بنگال میں راج بھون اور سکریٹریٹ میں نئی رسہ کشی
مودی کے خلاف توہین عدالت مقدمہ دائر کرنے کا فیصلہ: مشیر حکومت تلنگانہ
خلیج بنگال میں ہوا کا دباؤ کم ،طوفان میں تبدیل ،کئی اضلاع میں ریڈ الرٹ جاری

بی جے پی نے قبائلیوں پر "تشدد” اور پولیس کی مبینہ فائرنگ میں پارٹی کے ایک کارکن کی موت کے خلاف احتجاج کے لیے ریاست کے شمالی حصے کے آٹھ اضلاع میں بند کی اپیل کی ہے۔

صبح 6 بجے شروع ہونے والے بند میں بی جے پی کارکنان نے اہم چوراہوں پر سڑکوں پر ریلی نکالی ور گاڑیوں کو روکا۔

کوچبہار ضلع میں اگرچہ سرکاری بسیں چلتی رہیں، پرائیویٹ بسیں صبح کے وقت سڑکوں سے غائب رہیں۔

زیادہ تر دکانیں جلپائی گوڑی ضلع میں بند رہیں۔ بند کے حامیوں نے کدم تلہ میں سرکاری بسوں کو زبردستی روک دیا۔شمالی بنگال کے علاقے میں کوچ بہار، جلپائی گوڑی، علی پوردوار، دارجلنگ، کالمپونگ، شمالی دناج پور، جنوبی دناج پور اور مالدہ اضلاع شامل ہیں۔

a3w
ذریعہ
یواین آئی
a3w