دہلی

سرحد پر امن کے بغیر چین کیساتھ تعلقات میں پیشرفت نہیں

مشرقی لداخ میں لائن آف ایکچول کنٹرول (ایل اے سی)پر ہندوستان اور چین کی فوجوں کے درمیان گزشتہ تین سال سے جاری تعطل کے درمیان وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے جمعرات کو یہاں چین کے وزیر دفاع جنرل لی شانگفو سے ملاقات کی۔

نئی دہلی: مشرقی لداخ میں لائن آف ایکچول کنٹرول (ایل اے سی)پر ہندوستان اور چین کی فوجوں کے درمیان گزشتہ تین سال سے جاری تعطل کے درمیان وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے جمعرات کو یہاں چین کے وزیر دفاع جنرل لی شانگفو سے ملاقات کی۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کی ترقی کے لیے سرحد پر امن اور دوستی کی فضا کا ہونا ضروری ہے۔چین کے وزیر دفاع شنگھائی تعاون تنظیم کی میٹنگ میں شرکت کے لیے یہاں آئے ہوئے ہیں۔

جمعہ کو تنظیم کی میٹنگ سے قبل دونوں وزرائے دفاع کی ملاقات کے بعد وزارت دفاع نے ایک بیان جاری کیا جس میں کہا گیا کہ دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ تعلقات کے مختلف پہلوؤں بشمول ہندوستان-چین سرحدی سرگرمیوں پر کھل کر بات کی۔

سنگھ نے چینی وزیر دفاع سے واضح الفاظ میں کہا کہ ہندوستان اور چین کے درمیان تعلقات کو آگے بڑھانے کے لیے سرحد پر امن اور دوستی کا ماحول ضروری ہے۔ سنگھ نے اس بات پر زور دیا کہ لائن آف ایکچوئل کنٹرول سے متعلق تمام مسائل کو موجودہ دو طرفہ معاہدوں اور وعدوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ معاہدوں کی خلاف ورزی سے دو طرفہ تعلقات کی بنیادیں منہدم ہو چکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صرف سرحد پر فوجیوں کے پیچھے ہٹنے سے کشیدگی میں کمی آئے گی۔واضح رہے کہ چین کے ساتھ فوجی تعطل شروع ہونے کے بعد چینی وزیر دفاع کا یہ پہلا دورہ ہند ہے۔

ہندوستان پہلے ہی مختلف ملاقاتوں کے دوران کہہ چکا ہے کہ چین کے ساتھ تعلقات اس وقت تک آگے نہیں بڑھ سکتے جب تک سرحد پر امن قائم نہیں ہو جاتا۔

a3w
a3w