لوک سبھا الیکشن2024: ملک میں الکٹرانک ووٹنگ مشینوں کی ابتدائی جانچ شروع

الیکشن کمیشن عہدیدار‘ حلقہ لوک سبھا وائیناڈ میں تمثیلی الیکشن کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دے رہے تھے۔ یہ حلقہ راہول گاندھی کی رکنیت رد ہونے کے باعث مخلوعہ ہے۔

نئی دہلی: 2024 کے لوک سبھا الیکشن اور جاریہ سال کے اواخر میں 5 ریاستوں کے اسمبلی الیکشن سے قبل الیکشن کمیشن نے ملک بھر میں الکٹرانک ووٹنگ مشینوں اور پیپر ٹریل مشینوں کی ابتدائی جانچ مرحلہ وار شروع کردی ہے۔

 ذرائع کا کہنا ہے کہ تمثیلی الیکشن‘ فرسٹ لیول چیک کا حصہ ہے۔ الیکشن کمیشن کے ایک عہدیدار نے کہا کہ یہ ملک گیر مشق ہے۔ اسے مرحلہ وار سارے ملک میں روبہ عمل لایا جائے گا۔اس میں کیرالا کے حلقے بھی شامل ہوں گے۔

الیکشن کمیشن عہدیدار‘ حلقہ لوک سبھا وائیناڈ میں تمثیلی الیکشن کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دے رہے تھے۔ یہ حلقہ راہول گاندھی کی رکنیت رد ہونے کے باعث مخلوعہ ہے۔

ملک میں فی الحال لوک سبھا کی 5 نشستیں وائیناڈ‘ پونے‘ چندرپور(مہاراشٹرا)‘ غازی پور (اترپردیش) اور انبالہ (ہریانہ)مخلوعہ ہیں۔فرسٹ لیول چیک کے دوران بی ای ایل اور ای سی آئی ایل کے انجینئرس فنی خرابیوں کی جانچ کرتے ہیں۔

یہ 2 سرکاری ادارے ہی الکٹرانک ووٹنگ مشینیں اور پیپر ٹریل مشینیں تیار کرتے ہیں۔ ناقص مشینیں مرمت یا تبدیلی کے لئے مینوفیکچررس کو بھیج دی جاتی ہیں۔ تمثیلی جانچ سیاسی جماعتوں کے نمائندوں کی موجودگی میں 2 مشینوں میں کرکے دیکھی جاتی ہے کہ آیا ان میں کوئی فنی خرابی یا نقص تو نہیں۔