شمال مشرق

ممتا بنرجی نے گاؤں والوں کے ساتھ کھانا کھایا

چیف منسٹر نے ایک ایک کرکے ننھے بچوں کو سردیوں کے کپڑے حوالے کئے۔ ان سے باتیں کیں۔ممتا بنرجی نے طلباء سے سوال کیا کہ وہ بڑے ہو کر کیا بننا چاہتے ہیں؟ کسی کا جواب انجینئر، کسی کا جواب ڈاکٹر بننے کا تھا۔

کلکتہ: چیف منسٹر ممتا بنرجی نے حسن آباد میں گاؤں والوں کے ساتھ بیٹھ کر کھانا کھا یا اور ان کی شکایتیں سنیں، چیف منسٹر کیلئے الگ سے کوئی کھانا تیار نہیں کیاگیا تھا۔ حسن آباد کے کھا پوکور گاؤں کے لوگوں کے ذریعہ بنائے گئے چاول اور سالن کھا کر اپنا لنچ ختم کیا۔

چیف منسٹر ممتا بنرجی سندربن کے دو روزہ دورے پر ہیں۔ کل رات وہیں گزاری ہیں۔ چہارشنبہ کی صبح ممتا نرجی کشتی کے ذریعہ حسن آباد کے کھاپکور پہنچیں۔ممتا بنرجی اچانک کھا پکور جونیئر پرائمری اسکول میں دیگر دنوں کی طرح چہارنشبہ کو بھی کلاسز چل رہی تھیں۔اچانک وزیر اعلیٰ وہاں پہنچ گئیں تو طلبا اور اساتذہ حیران رہ گئے۔

چیف منسٹر نے ایک ایک کرکے ننھے بچوں کو سردیوں کے کپڑے حوالے کئے۔ ان سے باتیں کیں۔ممتا بنرجی نے طلباء سے سوال کیا کہ وہ بڑے ہو کر کیا بننا چاہتے ہیں؟ کسی کا جواب انجینئر، کسی کا جواب ڈاکٹر بننے کا تھا۔

چیف منسٹر نے یہ بھی پوچھا کہ کون کون سا گانا جانتا ہے؟ مڈ ڈے میل کے بارے میں بھی دریافت کیا۔ کچھ دیر بچوں کے ساتھ رہنے کے بعد ممتا نے گاؤں کی خواتین میں موسم سرما کے کپڑے تقسیم کئے۔ ممتا بنرجی خواتین کے درمیان زمین پر بیٹھ گئیں اور ان سے باتیں کیں۔ ممتا بنرجی ان دودنوں میں عوامی رابطہ بنانے کی کوشش کی۔

a3w
a3w