کھیل

سوریہ کمار آرسی بی کے گیندبازوں کے ساتھ کھیل رہے تھے: سنیل گواسکر

ممبئی کے سامنے 200 رنز کا ہدف رکھا لیکن ممبئی نے سوریہ کمار اور نہال وڈھیرا کے درمیان 140 رنز کی شراکت کی مدد سے یہ ہدف 17ویں اوور میں حاصل کر لیا۔

ممبئی: سابق ہندوستانی کرکٹر سنیل گواسکر نے ممبئی انڈینس کے دھماکہ خیز بلے باز سوریہ کمار یادو کی رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کے خلاف 360 ڈگری کی بلے بازی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ وہ آر سی بی کے گیند بازوں کے ساتھ کھیل رہے تھے۔

متعلقہ خبریں
ونود کامبلی کا بیوی پر حملہ، پولیس کی جانب سے نوٹس جاری
راشد خان نے پرپل کیاپ پر قبضہ جمالیا
ہیلمٹ واقعہ پر اویش خان نے خاموشی توڑدی
ویراٹ کو دوبارہ ٹسٹ کپتان بنانا چاہئے: سابق کپتان
سوریا کمار یادو نے منفرد ریکارڈ اپنے نام کرلیا

آر سی بی نے منگل کو ممبئی کے سامنے 200 رنز کا ہدف رکھا لیکن ممبئی نے سوریہ کمار اور نہال وڈھیرا کے درمیان 140 رنز کی شراکت کی مدد سے یہ ہدف 17ویں اوور میں حاصل کر لیا۔ سوریہ کمار نے 35 گیندوں پر سات چوکوں اور چھ چھکوں کی مدد سے 83 رنز بنانے کے بعد مین آف دی میچ کا ایوارڈ حاصل کیا۔

https://twitter.com/imAmanDubey/status/1655994909223190530

گواسکر نے اسٹار اسپورٹس کے پروگرام کرکٹ لائیو میں کہاکہ "اسکائی (سوریہ کمار یادو) گیند بازوں کے ساتھ کھیل رہے تھے۔ جب وہ بلے بازی کرتے ہیں تو ایسا لگتا ہے کہ گلی کرکٹ چل رہی ہے۔ آر سی بی کے خلاف اس نے لانگ آن اور لانگ آف کھیلا۔ شاٹس مار کر شروعات کی۔ پھر اس نے چاروں طرف شاٹس کھیلنا شروع کر دئیے۔

سوریہ کمار کے ساتھ سنچری شراکت داری کرنے والے وڈھیرا نے بھی شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کیا۔ انہوں نے 34 گیندوں پر 51 رنز کی ناٹ آؤٹ اننگز میں چار چوکے اور تین چھکے لگائے۔

گواسکر نے وڈھیرا کی اننگز پر کہاکہ "جب آپ سوریہ کمار کے ساتھ کھیلتے ہیں تو آپ کا اعتماد بڑھ جاتا ہے، لیکن نہال کی اننگز کی سب سے اچھی بات یہ ہے کہ وہ سوریہ کی طرح شاٹس کھیلنے کی کوشش نہیں کر رہے تھے۔ ان کا توازن غیر معمولی تھا۔”

سابق ہندوستانی اسپنر ہربھجن سنگھ نے بھی وڈھیرا کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ممبئی ٹیم انتظامیہ کی طرف سے دیئے گئے موقع کو دونوں ہاتھوں سے پکڑا ہے۔

ہربھجن نے کہاکہ "نہال وڈھیرا نے اپنے مواقع کا زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھایا۔ انہیں انڈر 25 سے پنجاب رنجی ٹرافی میں لایا گیا تھا اور ممبئی کی طرف سے ان کا انتخاب قابل ستائش تھا۔ انہوں نے تلک ورما کی غیر موجودگی میں مواقع کو حاصل کیا۔”

a3w
a3w