یوروپ

یورپی ملک نے بھی غزہ کے محاصرہ کی مخالفت کردی

یورپی یونین کے رکن ملک ناروے نے بھی اسرائیل کی طرف سے غزہ کے محاصرے کو ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے۔

اوسلو: سعودی عرب کے بعد اب ایک یورپی یونین کے رکن ملک ناروے نے بھی اسرائیل کی طرف سے غزہ کے محاصرے کو ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے۔

متعلقہ خبریں
اسرائیلی فوج کے فضائی حملوں میں مزید 27 فلسطینی شہید
اسرائیل میں ویسٹ نائل بخار سے مرنے والوں کی تعداد 31 ہو گئی
فلسطین سے جمع ہونے والے ٹیکس فنڈز سے متعلق افسوسناک خبر
سعودی عرب میں رواں برس 100 سے زائد افراد کو موت کی سزا دی گئی
شعبہ عربی دہلی یونیورسٹی میں شاہ سلمان عالمی اکیڈمی برائے عربی زبان کے ایک وفد کا دورہ

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ناروے کی وزیر خارجہ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ بلاشبہ اسرائیل کو اپنے دفاع کاحق حاصل ہے مگر اسے یہ حق نہیں کہ اپنے دفاع کے نام پر جو چاہے کرے۔

انہوں نے کہا کہ میں غزہ کے غیر انسانی محاصرے کی مذمت کرتی ہوں، غزہ کے لوگوں کو خوراک اور ادویات تک کی فراہمی ناممکن ہوگئی ہے۔ سکنڈے نیوین ملک نے حماس کے اسرائیل پر حملوں کی بھی مذمت کی ہے۔

واضح رہے کہ سات اکتوبر سے اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگی صورت حال چل رہی ہے۔ حماس نے اچانک اسرائیل پر ایک بہت بڑا راکٹ حملہ کر کے اسرائیل سمیت سب کو حیران کر دیا۔

جس کے بعد سے اسرائیل غزہ پر مسلسل بمباری کر رہا ہے۔ دونوں طرف اب تک سینکڑوں افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ اسرائیل نے 23 لاکھ کی آبادی کے حامل غزہ کا مکمل محاصرہ بھی کر رکھا ہے ۔ پانی ، خوراک ، بجلی سے لے کر ادویات تک غزہ میں لے جانا اسرئیلی محاصرے نے ناممکن بنا دیا ہے۔

a3w
a3w