حیدرآبادسوشیل میڈیا

ڈھونگی بابا کی جانب سے نئی نویلی دلہن کی عصمت ریزی

علاج کا جھانسہ دیکر ڈھونگی بابانے ایک نئی نویلی دلہن کی عصمت ریزی کردی۔ حسینی علم علاقہ کی انٹرمیڈیٹ طالبہ کی شادی تالاب کٹہ کے رہنے والے حاجی سے ایک ماہ قبل ہوئی تھی۔

حیدرآباد: علاج کا جھانسہ دیکر ڈھونگی بابانے ایک نئی نویلی دلہن کی عصمت ریزی کردی۔ حسینی علم علاقہ کی انٹرمیڈیٹ طالبہ کی شادی تالاب کٹہ کے رہنے والے حاجی سے ایک ماہ قبل ہوئی تھی۔

سسرالی افراد نے لڑکی کی صحت خراب ہورہی ہے بتاکربنڈلہ گوڑہ علاقہ میں رہنے والے ڈھونگی مظہر بابا کے پاس لے گئے۔ ذرائع نے بتایا کہ بابا کے پاس لڑکی کی آنکھوں پر پٹی باندھ کر روم میں چھوڑدیا گیا۔ ڈھونگی بابا نے لڑکی کی عصمت ریزی کردی۔

لڑکی نے گھر آکر شوہر اور ساس کوساری تفصیل بتائی۔ساس کا کہناتھا کہ تیرے جسم پر 5شیطان ہے گندے شیطانوں کونکالنے کے لئے گندہ کام کرنا ضروری ہے۔ لڑکی نے پولیس میں اس واقعہ کی شکایت درج کروانے کی بات کہی تولڑکی کو10دن کے لئے خالہ ساس کے گھر بندکر دیا گیا۔

پھرلڑکی کو والدہ نے اپنے گھر لے آئی اوربھوانی نگر پولیس میں عصمت ریزی کی شکایت کروائی گئی۔ پولیس نے کرائم نمبر 100/2023 میں دفعہ 376(1)354BIPc کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔ تاہم آج تک گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔

پوچھے جانے پر بھوانی نگر پولیس نے کہاکہ کیس بنڈلہ گوڑہ پولیس کوبھیج دیاگیا جبکہ بنڈلہ گوڑہ پولیس والوں کا کہناہے کہ فائل ابھی تک نہیں آئی۔ ا

نسپکٹر بنڈلہ گوڑہ شاکرعلی نے بتایا کہ ملزم دوسری ریاست کوفرار ہوگیا جبکہ سسرالی افراد لڑکی پردباؤ ڈال رہے ہیں کہ مظہر بابا کے خلاف کی گئی عصمت ریزی کی شکایت واپس لینے پر ہی وہ خلع دیں گے ورنہ لڑکی کواسی طرح لٹکاکر رکھیں گے۔یہاں یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ ایک طرف متاثرین کی پولیس مدد نہیں کررہی ہے اور دوسری طرف سسرالی افراد کاظلم ہورہاہے۔اس سے لڑکی اوراس کے والدین سخت پریشان ہیں کریں توکیاکریں۔

a3w
a3w