کھیل

ممبئی کو شکست دے کر لکھنؤ پلے آف کی دوڑ میں برقرار

ایکنا اسٹیڈیم میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے لکھنؤ نے تین وکٹوں پر 177 رن بنائے جس کے جواب میں ممبئی انڈینس مقررہ 20 اوورز میں پانچ وکٹوں پر 172 رنز ہی بنا سکی۔

لکھنؤ: لکھنؤ سپر جائنٹس نے مارکس اسٹونیس (89 ناٹ آؤٹ) اور کرونل پانڈیا (49 ریٹائرڈ ہرٹ) کی شاندار بلے بازی کے بعد گیند بازوں کی کارکردگی کی بدولت منگل کے روز انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) کے شاندار مقابلے میں ممبئی انڈینس کو پانچ رنز سے شکست دے کر خود کو پلے آف کی دوڑ میں برقرار رکھا۔

متعلقہ خبریں
مجھے اس سیزن میں صحیح مواقع نہیں ملے: عمران ملک
نوین الحق نے کوہلی‘کوہلی کے نعروں پر خاموشی توڑی
راشد خان نے پرپل کیاپ پر قبضہ جمالیا
سوریہ کمار آرسی بی کے گیندبازوں کے ساتھ کھیل رہے تھے: سنیل گواسکر
جوفرا آرچر کی جگہ کرس جارڈن ممبئی انڈینس میں شامل

ایکنا اسٹیڈیم میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے لکھنؤ نے تین وکٹوں پر 177 رن بنائے جس کے جواب میں ممبئی انڈینس مقررہ 20 اوورز میں پانچ وکٹوں پر 172 رنز ہی بنا سکی۔

اس میچ میں جیت کے ساتھ ہی لکھنؤ پوائنٹس ٹیبل میں 15 پوائنٹس کے ساتھ تیسرے نمبر پر پہنچ گیا ہے جبکہ ممبئی 14 پوائنٹس کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے۔ لکھنؤ کا اگلا مقابلہ کولکاتہ نائٹ رائیڈرس سے ہوگا۔

روی بشنوئی (2/26) اور یش ٹھاکر (2/40) اور محسن خان (1/26) نے آخری دو اووروں میں اسٹونیس اور پانڈیا کی عمدہ 82 رنز کی شراکت کے بعد لکھنؤ کی جیت میں اہم کردار ادا کیا۔

ممبئی کی ٹیم اچھی شروعات کرنے کے باوجود جیت سے صرف پانچ قدم دور رہی۔ 178

 رنز کے جیت کے ہدف کے تعاقب میں ممبئی کی اوپننگ جوڑی ایشان کشن (59) اور روہت شرما (37) نے پہلی وکٹ کے لیے باآسانی 90 رنز جوڑے لیکن درمیانی اوورز میں سپر ڈوپر سوریہ کمار یادو (7) اور نہال بڈھیرا (16) ) رنز کی رفتار بڑھانے کی کوشش میں سستے میں اپنی وکٹ گنوا بیٹھے۔

اس سے پہلے، ایکنا اسٹیڈیم میں ٹاس ہارنے کے بعد پہلے بلے بازی کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے، لکھنؤ کو اننگز کے تیسرے اوور میں دیپک ہڈا (5) اور پریرک مکند (0) کی صورت میں دو جھٹکے لگے۔ دونوں جیسن بیرنڈورف کا نشانہ بنے۔

دونوں بلے بازوں نے ہر ڈھیلی گیند پر حملہ کیا اور اپنی وکٹیں بچائیں جس کے نتیجے میں لکھنؤ کا سکور بورڈ ہلنے لگا۔

دریں اثنا، اننگز کے 16ویں اوور میں، پانڈیا پٹھوں میں کھچاؤ کی وجہ سے ریٹائرڈ ہرٹ ہو گئے اور میدان سے باہر چلے گئے۔

انہوں نے اپنی 49 رنز کی اننگز میں 42 گیندیں کھیلی اور ایک چوکا اور ایک چھکا لگایا۔

دوسرے سرے پر اسٹوئنس کا جارحانہ انداز طوفان میں بدل گیا اور انہوں نے گراؤنڈ کے چاروں طرف چوکوں اور چھکوں کی بارش کردی، انہوں نے نکولس پوران (آٹھ ناٹ آؤٹ) کے ساتھ آخری چار اوورز میں اپنی ٹیم کے لیے 60 رنز جوڑے۔

اسٹوئنس کی شاندار اننگز میں چار چوکے اور آٹھ چھکے شامل تھے۔

a3w
a3w