مشرق وسطیٰ

سعودی عرب میں خواتین کی پہلی بار فوجی پریڈ میں شرکت

سعودی عرب میں خواتین نے پہلی بار فوجی پریڈ فدا میں شرکت کی، جس میں 2 ہزار سے زائد مرد و خواتین شامل تھے۔

ریاض: سعودی عرب میں خواتین نے پہلی بار فوجی پریڈ فدا میں شرکت کی، جس میں 2 ہزار سے زائد مرد و خواتین شامل تھے۔

متعلقہ خبریں
سعودی عرب میں افسانہ نویسی کیلئے اعزاز
سعودی عرب میں رواں برس 100 سے زائد افراد کو موت کی سزا دی گئی
شعبہ عربی دہلی یونیورسٹی میں شاہ سلمان عالمی اکیڈمی برائے عربی زبان کے ایک وفد کا دورہ
اسرائیل حماس مذاکرات شروع کریں، غزہ کے لوگ زیادہ انتظار نہیں کر سکتے: سعودی عرب
سعودی عرب میں لڑکی سے غیر اخلاقی حرکت پر ہندوستانی شہری گرفتار

عرب میڈیا کی رپورٹس کے مطابق پریڈ میں سعودی عرب کی وزارتِ داخلہ کے 16 سیکیورٹی کے شعبوں کے ارکان شریک ہوئے، ہتھیاروں سے لیس پریڈ میں پہلی بار آرکسٹرا بھی متعارف کرایا گیا ہے۔

اس موقع پر شرکاء نے فوجی نظم و ضبط اور ربط میں انفرادی مہارتیں پیش کیں جبکہ فوجی میوزیکل پرفارمنس کا بھی انعقاد کیا گیا، جس میں سعودی ریاست کا قیام، سلامتی اور تحفظ کی بحالی کے عزم کا اعادہ کیا گیا۔

وزارت ثقافت نے“فاؤنڈیشن مارچ”کی سرگرمی کا اہتمام کیا تھا جو دارالحکومت ریاض کے شہزادہ ترکی بن عبدالعزیز اول روڈ پر منعقد کی گئی، اس مارچ میں وزارت داخلہ کی فوجی پریڈ اور دیگر مشہور فنکاروں کی پرفارمنس بھی شامل تھی۔

اس کے علاوہ اس سعودی فوجی پریڈ ‘فدا’ میں پہلی بار آرکسٹرا بھی متعارف کرایاگیا۔عرب میڈیا کے مطابق یہ پریڈ سعودی ریاست کے قیام کے بعد سے سلامتی کے پیغام کے طور پرکی جاتی ہے، فوجی پریڈ کا عنوان ’فدا‘ رکھا گیا ہے جس سے ظاہر ہوتا ہیکہ سعودی فوج کے یہ سپوت وطن کے لیے اپنی جان فدا کرنے کے لیے تیار ہیں۔

a3w
a3w