شمالی بھارت

مودی کے ہندوستان میں سفر حج پر جانے والے بھی محفوظ نہیں، عازمین کی بس پر سنگباری، کئی زخمی

بس میں موجود لوگوں کا کہنا تھا کہ کسی کا کسی سے کوئی جھگڑا نہیں ہوا، بس پر ’حج یاترا‘ کا فلیکسی بیانر بھی لگایا گیا تھا، جسے دیکھ کر کچھ لوگوں نے بس پر پتھراؤ کردیا۔

نئی دہلی: راجستھان کے کوٹا شہر میں عازمین حج سے بھری بس پر پتھراؤ کیا گیا جس کے نتیجہ میں چند عازمین حج زخمی ہوگئے۔ یہ بس عازمین کو لے کر جے پور جارہی تھی جہاں اسے انہیں سعودی عرب کے لئے پرواز میں سوار ہونا تھا۔

متعلقہ خبریں
حج کمیٹی کا مینار گارڈن فنکشن ہال میں عازمین حج کا تربیتی اجتماع
زندہ جلائی گئی معذور کمسن لڑکی فوت تحقیقات کیلئے چیف منسٹر کا حکم
مودی کے خلاف ایف آئی آر درج نہ کرنے پر کارروائی رپورٹ طلب
پارلیمنٹ سیکیوریٹی میں نقائص، راجستھان کے ناگور سے موبائل فونس کے ٹکڑے برآمد
4 ریاستوں کے اسمبلی الیکشن نتائج کا کل اعلان، صبح 8 بجے سے ووٹوں کی گنتی

بس میں موجود لوگوں کا کہنا تھا کہ کسی کا کسی سے کوئی جھگڑا نہیں ہوا، بس پر ’حج یاترا‘ کا فلیکسی بیانر بھی لگایا گیا تھا، جسے دیکھ کر کچھ لوگوں نے بس پر پتھراؤ کردیا۔ یہ واقعہ کوٹا شہر کے کنہڑی تھانہ علاقے کی بنڈی روڈ پر پیش آیا۔

ابتدائی رپورٹس کے مطابق ملزمان فرار ہوگئے۔ دوسری طرف اسٹیشن ہاؤز آفیسر گنگا سہائے شرما نے بتایا کہ کوٹا سے ایک پرائیویٹ بس عازمین حج کو لے کر جے پور جا رہی تھی۔

کینال روڈ پر کیشو رائے پت چوراہے کے قریب کچھ لوگ کار اور بائیک سے جا رہے تھے۔ ان کی گاڑی عازمین حج سے بھری بس سے ٹکرا گئی۔ اس بات پر ان لوگوں کا بس ڈرائیور سے جھگڑا ہوگیا۔

https://twitter.com/AshrafFem/status/1661669979761287169

اس دوران بس میں سوار عازمین حج بھی نیچے اتر گئے اور دونوں فریقوں کے درمیان بحث ہوگئی۔ اس پر موٹر سائیکل اور کار میں سوار لوگوں نے کچھ عازمین حج کو مارا پیٹا اور بس پر پتھراؤ شروع کر دیا جس کے نتیجہ میں بس کے شیشے ٹوٹ گئے اور کچھ دیگر عازمین حج زخمی ہوگئے۔

اس بس کے پیچھے روڈ ویز کی ایک بس بھی آرہی تھی۔ موٹر سائیکل اور کار پر سوار لوگوں کی اس بس کے کنڈیکٹر سے بھی لڑائی ہوگئی۔ روڈ ویز بس کے ڈرائیور نے بتایا کہ اس کے کنڈکٹر پر حملہ کیا گیا۔ اطلاع دینے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی۔

پولیس افسر نے بتایا کہ اس معاملہ میں 6 افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔ پرائیویٹ بس میں سوار مسافروں اور روڈویز بس ڈرائیور نے پولیس میں شکایت درج کرائی۔

پرائیویٹ بس ڈرائیور کی رپورٹ پر دفعہ 307 اور روڈ ویز بس ڈرائیور کی رپورٹ پر مارپیٹ اور سرکاری کام میں رکاوٹ ڈالنے کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ پولیس نے زخمیوں کو علاج کے لئے دواخانہ منتقل کردیا ہے۔

ایک علیحدہ رپورٹ کے مطابق جیسے ہی پرائیویٹ بس بنڈی روڈ پر مینل ہوٹل کے سامنے سے گزری، اس دوران کوٹہ سے جودھ پور جانے والی روڈ ویز کی ایک بس بھی وہاں سے گزر رہی تھی کہ اس دوران ایک درجن شرپسندوں نے دونوں بسوں پر حملہ کر دیا۔

بس میں توڑ پھوڑ کی گئی جس سے دونوں بسوں میں بیٹھے مسافروں میں خوف وہراس پھیل گیا۔ توڑ پھوڑ سے بس میں بیٹھے کچھ مسافر زخمی بھی ہوئے۔ اس اچانک حملے سے حج پر جانے والے عازمین میں کہرام مچ گیا۔ عازمین حج اور ان کے رشتہ دار نجی بس میں سفر کر رہے تھے۔

شرپسندوں نے بس میں گھسنے کی کوشش بھی کی۔ روڈ ویز کے آپریٹر پر حملہ کیا گیا۔ جس سے علاقے میں کہرام مچ گیا، لوگوں کی بھیڑ موقع پر جمع ہو گئی۔ اطلاع ملنے پر پولیس وہاں پہنچی اور حالات کو سنبھالا۔

پولیس کے پہنچنے سے پہلے ہی شرپسند فرار ہو گئے۔ پولیس نے 108 ایمبولینس کی مدد سے تمام زخمیوں کو ہسپتال پہنچایا اور سڑک پر ٹریفک کو بحال کرایا۔ کنہڑی پولیس اسٹیشن کے عہدیدار گنگا سہائے شرما نے بتایا کہ شرابیوں نے شراب کے نشے میں یہ حرکت کی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ نامعلوم اشرار کے خلاف شکایت موصول ہوئی، فوری کارروائی کرتے ہوئے پولیس نے شرپسندوں کی نشاندہی کی جس کی بنیاد پر 6 افراد کو گرفتار کیا گیا، تحقیقات جاری ہیں۔

a3w
a3w