تلنگانہ

سسوڈیہ کی گرفتاری‘ چیف منسٹر کی مذمت

چیف منسٹرکے چندرشیکھرراؤ نے کہا کہ نریندرمودی اوراڈانی کے درمیان ساز باز سے عوام کی توجہ ہٹانے کے لئے دہلی کے ڈپٹی چیف منسٹرمنیش سسوڈیہ کوگرفتارکیاگیاہے۔

حیدرآباد: چیف منسٹرکے چندرشیکھرراؤ نے کہا کہ نریندرمودی اوراڈانی کے درمیان ساز باز سے عوام کی توجہ ہٹانے کے لئے دہلی کے ڈپٹی چیف منسٹرمنیش سسوڈیہ کوگرفتارکیاگیاہے۔

متعلقہ خبریں
تلنگانہ ہائی کورٹ میں تحقیقاتی کمیشن کو غیر قانونی قرار دینے کی درخواست مسترد
سسوڈیہ کو جیل نمبر 1 میں کوئی خطرہ نہیں۔ انتظامیہ کی وضاحت
بی آر ایس کی 16نیوز چانلس کے خلاف شکایت
باپ اور بیٹے کا جیل جانا یقینی: وینکٹ ریڈی
توہین آمیز ریمارکس پر کے سی آر کو نوٹس

سسوڈیہ کی گرفتاری پرردعمل ظاہر کرتے ہوئے کے سی آر نے کہاکہ سابق میں ان سے پوچھ تاچھ کی گئی تھی اب مودی۔اڈانی اسکام سے عوام کی توجہ ہٹانے کے لئے ڈرامہ بازی شروع کی گئی ہے۔بی آرایس سربراہ وچیف منسٹرکے چندرشیکھرراؤ نے اپنے بیان میں سسوڈیہ کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

حکمراں جماعت بھارت راشٹرا سمیتی کے کارگزارصدر کے تارک راماراؤ نے دہلی کے ڈپٹی چیف منسٹرمنیش سسوڈیہ کی گرفتاری پر شدید ردعمل کااظہار کیا اور سی بی آئی کی جانب سے سسوڈیہ کوگرفتار کرنے کے عمل کو غیر جمہوری قرار دیا۔

کے ٹی آر جن کے پاس بلدی نظم ونسق وشہری ترقیات‘آئی ٹی وصنعتیں کا قلمدان بھی ہے‘نے کہاکہ بی جے پی کا عمل غیر جمہوری اور شیطانی ہے۔ بی آرایس لیڈر نے کہاکہ وہ جاننا چاہتے ہیں کہ گزشتہ 8 برسوں کے دوران بی جے پی کے کتنے قائدین اور ان کے رشتہ داروں کیخلاف ای ڈی‘ آئی ٹی اور سی بی آئی کے دھاؤے کرائے گئے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ پورا ملک دیکھ رہا ہے کہ سنگین الزامات کے باوجودوزیر اعظم کے ساتھیوں کی کس طرح حفاظت کی جاتی ہے اور کس طرح اپوزیشن کونشانہ بنایا جارہاہے۔ کے ٹی آر نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہاکہ مودی کا طریقہ یہی ہے کہ اپوزیشن جماعتوں کو نشانہ بنایاجائے۔

انہیں اس طرح نشانہ بنایا جائے کہ وہ اپوزیشن مختلف جماعتوں میں تقسیم ہوجائے یا پھر ان کے ارکان اسمبلی کوخریدکر منتخب حکومتوں کوگرایاجائے۔اگر کچھ بھی کام نہیں ہے تومودی اپنے حامیوں سی بی آئی‘ای ڈی اور آئی ٹی کواستعمال کرتے ہوئے انہیں ہراساں کیاجائے۔

a3w
a3w